Wednesday, January 16, 2013

 

چار جنوری




جنوری چار، دو ہزار بارہ


ایک فکر کے سلسلے کا کالم

کالم شمار ایک سو انیس



 چار جنوری

چار جنوری کا دن درد ناک یادیں لے کر آتا ہے۔ ایک نہایت پڑھا لکھا شخص جو ایک اعلی عہدے پہ فاءز تھا اور لاکھوں لوگوں کے کام آتا تھا۔ وہ ایسا رحم دل شخص تھا کہ جب ایک کمزور عورت کو ہر طرف سے گھیر لیا گیا تو وہ شخص اس عورت کی مدد کے لیے آگے بڑھا۔ اور دوسری طرف تھا چند جماعتیں پڑھا ایک گمراہ آدمی۔ ایک گھٹیا آدمی کہ جس عالم کی حفاظت کے لیے اسے تعنیات کیا گیا تھا، اپنی گمراہی میں اس نیچ آدمی نے اس عالم کو ہی مار ڈالا۔ لعنت ہے تم پہ ممتاز قادری۔ تم سے بہتر تو کتے ہوتے ہیں کہ جس وسیلے سے روٹی کھاتے ہیں اس سے وفاداری تو کرتے ہیں۔ اور تف ان لوگوں پہ جو اس اصل گستاخ رسول ممتاز قادری پہ پھول نچھاور کرتے ہیں۔ ممتاز قادری اگر ایک ذلیل انسان نہ ہوتا تو سلمان تاثیر سے اپنے نظریاتی اختلاف پہ اپنی نوکری سے استعفی دے دیتا؛ چپکے سے ان پہ وار نہ کرتا۔
دو روز پہلے اپنے لیپ ٹاپ کی بیٹری خریدنے کے لیے کراچی کے ایک بازار میں جانے کا اتفاق ہوا۔ ایک دیوار پہ لگے پوسٹر کو دیکھ کر دنگ رہ گیا۔ پوسٹر یہاں ملاحظہ فرماءیے:
http://1.bp.blogspot.com/-3IpZTdWYAMs/UOZojTvGptI/AAAAAAAADsE/rC7WCBULH5g/s1600/DSC_0233-shamefl+poster.JPG
 اس پوسٹر پہ درج ذیل عبارت تحریر ہے۔
"یا رسول اللہ ہم شرمندہ ہیں۔ آپ کے گستاخ زندہ ہیں۔
سیدنا امام مالک سے خلیفہ ہارون رشید نے گستاخ رسول کا حکم دریافت کیا تو آپ نے فرمایا۔
اس امت کے باقی رہنے کا کیا جواز ہے کہ جس کے نبی کی توہین کر دی جاءے۔
محبوب سے محبت کرنے والے غیرت مند بھاءیو۔
آءیے ہم اپنا مقصد حیات یہ بنا لیں کہ
میرا سب کچھ آپ پر قربان یا رسول اللہ۔
یاد امت میں آنسو بہانے والے محبوب سے وفا کی خاطر عزم کر لیجیے۔
۱۔ لبیک یا رسول اللہ ریلی کے لیے علما و مشاءخ اہلسنت جب بھی طلب فرماءیں گے ہم فورا حاضر ہو جاءیں گے۔
۲۔ مصطفی کی پسند ہماری پہچان ہو۔ جیسے ایک نماز قضا نہ ہو، داڑھی شریف، پردہ، سچاءی، وغیرہ۔
۳۔ کم از کم ایک بار اپنی مساجد میں درس قرآن پاک کا اہتمام کرواءیں۔
۴۔ میک ڈانلڈ، کے ایف سی، پیٹزا ہٹ، پیپسی، کوکا کولا اور دیگر وہ پراڈکٹس کہ جن کا فاءدہ یہود و نصاری کو ہے ان کا بھی باءیکاٹ کیجیے۔
۵۔ جس نے محبوب سے وفا کی اس غازی ملت ملک ممتاز حسین قادری کے لیے روانہ کم از کم ایک نماز میں دعا کا اہمتمام کرواءیں۔
یا رسول اللہ یہ تحریر ہر مقام کی زینت ہو اور آپ ہمارے تمام گھر والوں کی شفاعت فرماءیں۔
ملنے کا پتہ، جامع مسجد بہار شریعت، بہادر آباد، کراچی۔

درج بالا کس قدر گمراہ عبارت ہے۔ اس پوسٹر میں ایسی اشتعال انگیز زبان استعمال کی گءی ہے کہ اس کو بغیر سمجھے پڑھنے والے نادان لوگ اپنے نبی کی محبت میں ان نوسربازوں کے پیچھے چل پڑیں۔ وہ یہ نہ سمجھیں کہ یہ آواز ہمارے نبی کی نہیں ہے بلکہ ان مداریوں کی ہے جو ہمارے نبی کی عزت کے ٹھیکیدار بن کر خود اپنی دکان چمکانا چاہتے ہیں۔  ہاں، یقینا ہم بھی لبیک یا رسول اللہ کہہ کر اپنے نبی کے راستے پہ چلنا چاہتے ہیں مگر یقینا ان 'علما و مشاءخ' کے پیچھے ہرگز نہیں جو خود گمراہ ہیں۔ جو گاڑی چلا تو سکتے ہیں مگر یہ نہیں جانتے کہ گاڑی کام کیسے کرتی ہے۔ جو سیل فون تو استعمال کرتے ہیں مگر اس کی ٹیکنالوجی نہیں سمجھتے۔ جو تھوڑی کچی پکی عربی کے علاوہ کوءی علم نہیں جانتے اور اسلام کی سب سے بنیادی تعلیم یعنی علم کی جستجو سے بالکل پرے ہیں۔ ہم یقینا یہی چاہتے ہیں کہ ہمارے نبی کی پسند ہماری پہچان ہو۔ مگر اس ضمن میں سچاءی، صفاءی، جدید سوچ، اور نظم و ضبط کو سب سے پیچھے نہیں دھکیلنا چاہتے۔ ہم حقوق العباد کو حقوق اللہ سے آگے سمجھتے ہیں کہ ہمارے نبی نے ہمیں یہی سکھایا تھا۔  اور ہم ممتاز قادری کو ہر گز غازی ملت نہیں سمجھتے۔ اس ملعون نے ہمارے نبی سے ہرگز کسی قسم کی وفا نہیں کی ہے۔ اس گھٹیا شخص نے تو اسلام کا اور ہمارے نبی کا نام بدنام کرنے کی کوشش کی ہے۔ اس شخص نے تو وہ کام کیا ہے کہ جس کی ممانعت ہمارے نبی نے خاص طور پہ کی تھی کہ معاشرے میں فساد پھیلانے والے نہ بنو۔ اس شخص نے تو لاقانونیت کی وہ راہ دکھلاءی ہے کہ لوگ اپنی اپنی مرضی سے فیصلہ کریں کہ ان کا اسلام ان کو کیا کرنے پہ مجبور کر رہا ہے اور اس اندرونی آواز کو سن کر جیسی چاہے قتل و غارت گری کریں۔


Comments:
مجھے آپ کی اس تحریر کی ہر سطر سے اتفاق ہے۔ خدا ہمیں عقل کی تو فیق دے۔ اور تاثیر جیسے کئی نئے انسان تخلیق کرے۔

 
مجھے اس تحریر کی ہر سطر سے اتفاق ہے۔ خدا سلمان تاثیر کو جنت نصیب کرے اور اس جیسے کئی انسان تخلیق کرے۔ آمین
 
جو لوگ سلمان بے تاثیر کو مظلوم اور ممتاز قادری کو مجرم کہتے ہیں میں ان لوگوں پر لعنت بھیجتا ہوں اور ان عورتوں پر لعنت بھیجتا ہوں جنھوں نے سلمان بےتاثیر جیسے کافروں کو جنم دیا

 
Post a Comment



<< Home

This page is powered by Blogger. Isn't yours?